• Home »
  • نیوز »
  • آغا خان ن ہائیر سکینڈری سکول سین لشٹ میں تین روز ہ سپورٹ گالہ اپنی ر نگینیوں کے ساتھ سٹوڈنٹس فنکاروں کی موسیقی اور ڈھول کی تھاپ پر اختتام پذیر ہو ا۔

آغا خان ن ہائیر سکینڈری سکول سین لشٹ میں تین روز ہ سپورٹ گالہ اپنی ر نگینیوں کے ساتھ سٹوڈنٹس فنکاروں کی موسیقی اور ڈھول کی تھاپ پر اختتام پذیر ہو ا۔

چترال (محکم الدین)  فائنل میچوں کے مہمان خصوصی چترال کے نامور پولو پلیئر و صدر چترال پولو ایسوسی ایشن شہزادہ اور سابق تحصیل ناظم مستوج سکندرالملک تھے۔ سپورٹ گالہ کے فائنل مقابلے اے کے ایچ ایس ایس کے مختلف کلاسوں کے مابین ہوئے ۔ جس میں باسکٹ بال، رسہ کشی، سیک ریس (بوری بند دوڑ)، فٹ سال اور میرا تھن میں فرسٹ ائیر نے کامیابی حاصل کی۔ بیڈ منٹن اور والی بال میں دسویں جماعت نے اور کرکٹ فٹبال میں سیکنڈ ائیر نے میدان مار لیا۔ اسی طرح مجموعی طور پرکھیلوں میں فرسٹ ائیر کے طلباء کا پلہ بھاری رہا۔ تین روزہ سپورٹس گالہ 15اکتوبر سے شروع ہوا تھا۔ جو کہ 18اکتوبر کے چار بجے اختتام کو پہنچا۔ تاہم فائنل کے تمام کھیل خصوصا رسہ

کشی کا مقابلہ انتہائی دلچسپ رہا۔ اور مہمانان،سکول کے اساتذہ اور تماشائی طلباء اس مقابلے سے انتہائی محظوظ ہوئے۔ فیسٹول کے اختتام پر مہمان خصوصی شہزادہ سکندر الملک نے کامیاب ٹیموں اور نمایان کردار ادا کرنے والے سپورٹس مین میں انعامات تقسیم کی۔ جبکہ تقسیم انعامات میں سکول کے اساتذہ اور صحافی بھی شامل رہے۔ اس موقع پر مہمان خصوصی شہزادہ سکندالملک نے خطاب کرتے ہوئے کہا۔ کہ یہ چترال کے طلباء کی خوش قسمتی ہے۔ کہ ہز ہائی نس پرنس کریم آغان نے چترال میں تعلیم کیلئے ایک ایساا دارہ قائم کیا ہے۔ جسے دیکھ کر دل میں یہ حسرت پیدا ہوتی ہے کہ کاش دوبارہ بچپن لوٹ آئے اور اس تعلیمی ادارے سے تعلیم حاصل کرنے کا موقع ملے ۔ لیکن یہ ہمارے بس کی بات نہیں۔ مگر مجھے اُمید ہے کہ میری یہ آرزو اے کے ایچ ایس ایس کے با صلاحیت طلباء پوری کر یں گے ۔

انہوں نے طلباء پر زور دیا۔ کہ وہ اپنی صلاحیتوں کو تعلیم کے حصول کیلئے بروئے کار لائیں۔ اور اگر کسی وجہ سے مطلوبہ نتائج حاصل نہ ہونے کی صورت میں دلبرداشتہ نہ ہوں۔ کیونکہ انسانی کامیابی صرف تعلیم سے وابستہ نہیں۔ دُنیا میں کامیابی کے اور بھی بہت راستے ہیں۔ انہوں نے کہا۔ کہ چترال میں بہت ایسے دولت مند افراد موجود ہیں، جن کے پاس واجبی سی تعلیم ہے۔ لیکن وہ کامیاب زندگی گزار رہے ہیں۔ اگر اُن کے پا س اعلی تعلیم کی دولت ہوتی تو شاید اُن کی کامیابی کا دائرہ اور بھی وسیع ہوتا۔ انہوں نے کہا۔ کہ دُنیا میں نام پیدا کرنے کیلئے کھیل انتہائی اہمیت کی حامل ہیں۔ اور خود مجھے اس بات پر فخر ہے۔ کہ ملک میں بہت سارے لوگ مجھے پولو کی وجہ سے جانتے ہیں۔ اور عزت دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا۔ کہ موجودہ دور میں تعلیم کے بغیر آگے جانا ممکن نہیں۔ کیونکہ کھلاڑیوں کیلئے بھی تعلیم بنیادی اہمیت رکھتی ہے۔ انہوں نے طلباء سے کہا۔ کہ بہترین سپورٹس مین وہ ہے۔ جس کے دل میں ہار برداشت کا مادہ موجود ہو۔ انہوں نے طلباء کو پولو کی طرف آنے کی ترغیب دی اور پرنسپل سکول سے کہا۔ کہ جو طلباء پولو کے ساتھ دلچسپی رکھتے ہیں۔ وہ اپنے تین ذاتی گھوڑے اور مستوج میں اپنے قلعے میں اُن کو رہائش دینے کی آفر کرتے ہیں۔ شہزادہ سکند نے سپورٹ گالہ میں اُنہیں بظور مہمان خصوصی دعوت دینے پر پرنسپل اور اساتذہ کا شکریہ ادا کیا۔ پرنسپل اے کے ایچ ایس ایس طُفیل نواز نے اپنے خطاب میں تین روزہ سپورٹس گالہ کو بہترین طریقے سے انعقاد پر کوآرڈنیٹر سپورٹس کمیٹی اور ممبران کی تعریف کی۔ اور سکول کے اساتذہ اور طلباء کے بھر پور تعاون اور اس ایونٹ کو کامیاب بنانے پر سب کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا۔ کہ اگلی بار سپورٹس گالہ مزید تیاریوں کے ساتھ زیادہ منظم طریقے سے منعقد کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا۔ کہ طلباء میں بے پناہ صلاحیتیں موجود ہیں۔ چاہے تعلیم ہو کہ کھیل و ثقافت۔ ان میں کسی بھی چیز کی کمی نہیں صرف رہنمائی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا۔ کہ یہ طلباء آگے جا کر تعلیم اور سپورٹس دونوں شعبوں میں چترال کا نام روشن کریں گے۔ سپورٹس گالہ کے دوران طلباء میوزیکل ٹیم نے بھر پور فن کا مظاہرہ کیا۔ اور پوری ایونٹ کے دوران لائیو موسیقی سے مہمانان اور تماشائی اساتذہ طلباء محظوظ ہوئے۔ حاضرین نے بہترین ثقافتی شو پیش کرنے پر اُن کی تعریف کی اور داد دی۔