• Home »
  • Uncategorized »
  • پاکستان مسلم لیگ (ن) نے کہا ہے کہ حکمران رعونت کا لہجہ اختیار نہ کریں ، خدا نہ بنیں ،ظلم پھر ظلم ہے جب بڑھتا ہے تو مٹ جاتا ہے

پاکستان مسلم لیگ (ن) نے کہا ہے کہ حکمران رعونت کا لہجہ اختیار نہ کریں ، خدا نہ بنیں ،ظلم پھر ظلم ہے جب بڑھتا ہے تو مٹ جاتا ہے

لاہور( ا)پاکستان مسلم لیگ (ن) نے کہا ہے کہ حکمران رعونت کا لہجہ اختیار نہ کریں ، خدا نہ بنیں ،ظلم پھر ظلم ہے جب بڑھتا ہے تو مٹ جاتا ہے ،حکومت کی معاشی پالیسیاں سمجھ سے بالا تر ہیں ،چلتی معیشت کو خراب کر دیا گیا ہے ،بطور وزیر خزانہ اسد عمر ناکام ثابت ہوئے ہیں ، نواز شریف تین بار ملک کے 
وزیراعظم رہے ابھی تک فیصلوں میں یہ چیز سامنے نہیں آئی کہ انہوں نے کک بیک لی ہو ۔ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنمائوں محمد زبیر، انجینئر خرم دستگیر اور سائرہ افضل تارڑ نے پارٹی قائد محمد نواز شریف سے کوٹ لکھپت جیل میں ملاقات کیلئے آمد کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ محمد زبیر نے کہا فیصلے کے خلاف عدالت میں درخواست دائر دائر کر دی ہے،نوازشریف جیل میں حوصلے سے ہیں ۔ انہوںنے کہا پاکستان پیپلز پارٹی کی سندھ اسمبلی میں اکثریت ہے ،سندھ میں گورنر راج کی باتیں کرنا بچگانا عمل ہے ترقی کی شرح کم ترین سطح ہر آگئی ہے ،اسد عمر کی بھی کارکردگی اچھی نہیں رہی ، ادھراسلام آباد میں مریم اورنگزیب اور مصدق ملک کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ یہ حکومت جھوٹوں کا ٹولہ ہے، اتنے جھوٹ بولنے والے کبھی اکٹھے نہیں ہوئے ، نجی ٹی وی سے گفتگو میںشاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ عبدالرزاق بتائیں کیا وہ ڈیسکون کمپنی کے بینی فیشل آنر نہیں ہیں، عبدالرزاق داود معاہدہ ختم کردیں یاحکومتی عہدہ چھوڑ دیں، معیشت کی خرابیاں اور ان کو دور کرنے کیلئے حکومت پارلیمنٹ میں معیشت پر بحث کروائے، انہوں نے کہا کہ عبدالرزاق داود کو 1998سے جانتا ہوں۔ ڈیم معاہد ے سے متعلق عبدالرزاق داود ہی بہتر بنا سکتے ہیں۔ عبدالرزاق داود بتائیں کیا وہ ڈیسکون کمپنی کے بینی فیشل آنر نہیں ہیں۔ عبدالرزاق دائود مہمند ڈیم کی تعمیر کے حوالے سے کنٹریکٹ ،معاہدہ ختم کریں یا حکومتی عہدہ چھوڑ دیں ۔ حکومت نے پارلیمنٹ کو مفلوج کردیا ہے۔ پارلیمنٹ میں عوامی مسائل پر بات نہیں ہورہی ۔